ترقی

پہلے ماں کی نظریں بتا دیتی تھی کہ غلطی کر رہے ہیں اور سزا ملے گی پھر ہم نے ترقی کر لی اور ماں موم (Mom) بن گئیں اتنی موم ہو گئی کہ اچھے برے کا فرق بتانے کے لیے سختی کرنا بھول گئیں۔۔۔!!! پہلے شام ہوتے ہی ابو کے

مکمل پڑھئے »
جین ڈی ﻻ ﻓﻮﻧﭩﯿﻦ ﺍﯾﮏ ﻣﺸﮩﻮﺭ ﻓﺮﺍﻧﺴﯿﺴﯽ ﻣﺤﻘﻖ ﻭﻣﺼﻨﻒ ﮔﺰﺭﺍ ﮨﮯ۔ ﺍُﺱ ﻧﮯ ” ﻣﺤﻨﺘﯽ ﭼﯿﻮﻧﭩﯽ " ﮐﮯ ﻧﺎﻡ ﺳﮯﺍﯾﮏ ﺭﻣﺰﯼ ﮐﮩﺎﻧﯽ ﻟﮑﮭﯽ ﺗﮭﯽ ﺟﺲ
اردو شاعری کی تاریخ میں بہت سے ایسے اشعار ہیں کہ جن کا ایک مصرعہ اتنا مشہور ہوا کہ ان کا دوسرا مصرعہ جاننے کی
‏وہ آدھ گھنٹے سے موبائل کے کیمرے کے لینز کو دوپٹے سے گھس رہی تھی.. پھر سیلفی لیتی اور دیکھ کر ڈلیٹ کر دیتی. اسکا
ﺑﯿﮕﻢ ﮐﭽﮫ ﻓﺎﺻﻠﮯ ﭘﺮ ﺑﯿﭩﮭﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﮨﺎﺗﮫ ﻣﯿﮟ ﺗﺴﺒﯿﺢ ﮐﮯ ﺩﺍﻧﮯ ﮔﮭﻤﺎﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﻣﺠﮭﮯ ﺩﯾﮑﮫ ﺭﮨﯽ ﺗﮭﯿﮟ…. کہ میں نماز کے بعد دعا مانگ رھا
آج بڑے دنوں بعد بابا جی سے ملاقات ہوئی سوچا کوئی انمول بات ہی پوچھ لی جائے میں نے پوچھا "باباجی موقع کسے کہتے ہیں
لڑکی والے ۔ ہمیں آپ کا لڑکا پسند نہیں ھے گھر والے ۔ یہ پسند تو ہمیں بھی نہیں ھے تو کیا اس کی شادی
ایک ميمن کے گھر کوئی مہمان وارد ہوا.. 😜😜 اس ميمن نے اپنے بیٹے سے کہا کہ آدھا کلو عمدہ گوشت لیتے آؤ بیٹا گیا
Close Menu