پظرس بخاری

ایک دن مرزا صاحب اور میں برآمدے میں ساتھ ساتھ کرسیاں ڈالے چپ چاپ بیٹھے تھے جب دوستی پرانی ہو جائے تو گفتگو کی چنداں

سعادت حسن منٹو

’’کون ہو تم؟‘‘ ’’تم کون ہو‘‘ ’’ہر ہرمہادیو۔۔۔۔۔۔ہر ہرمہادیو‘‘ ’’ہرہرمہادیو‘‘ ’’ثبوت کیا ہے؟‘‘ ’’ثبوت۔۔۔۔۔۔میرا نام دھرم چند ہے‘‘ ’’یہ کوئی ثبوت نہیں‘‘ ْ’’چارویدوں سے کوئی
Close Menu